30

جھنگ کے میڈیکل سٹور اور فارمیسی مالکان نے ادویات تبدیل کرنے کو اپنا وطیرہ بنا لیا ۔اکثر فارمیسیز اور میڈیکل سٹور بغیر فارماسسٹ چلنے لگے ۔غیر تربیت یافتہ اور کم تعلیم یافتہ ملازم لوگوں کی زندگیوں سے کھیلنے لگے ۔ جبکہ ڈسٹرکٹ ڈرگ کنٹرولر نے چپ سادھ لی ۔

جھنگ کے میڈیکل سٹور اور فارمیسی مالکان نے ادویات تبدیل کرنے کو اپنا وطیرہ بنا لیا ۔اکثر فارمیسیز اور میڈیکل سٹور بغیر فارماسسٹ چلنے لگے ۔غیر تربیت یافتہ اور کم تعلیم یافتہ ملازم لوگوں کی زندگیوں سے کھیلنے لگے ۔ جبکہ ڈسٹرکٹ ڈرگ کنٹرولر نے چپ سادھ لی ۔
جھنگ ۔(محمد جاوید اعوان) تفصیلات کے مطابق جھنگ کے اکثر میڈیکل سٹوروں اور فارمیسیز پر نان کوالیفا ئڈ اور کم تعلیم یافتہ ملازم ہیں جن کو ادویات کے بارے میں کچھ علم نہیں ہوتا اس لیے وہ ڈاکٹرز کے لکھے ہوئے نسخے یکسر تبدیل کر دیتے ہیں اور معصوم و مجبور مریضوں کی زندگیوں سے کھیلنے میں مصروف ہیں ۔
یہ بھی پتا چلا ہے کہ اکثر فارمیسیز پر فارماسسٹ موجود نہیں ہوتے
باخبر ذرائع سے یہ بھی پتا چلا ہے کہ فارمیسیز پر گھٹیا اور غیر معیاری ادویات بھی بیچی جاتی ہیں ۔یہی وجہ ہے کہ یہ لوگ دنوں میں کروڑ پتی بن گئے ہیں ۔
فارمیسی مالکان سے جب موقف لینے کی کوشش کی گئی تو آگے سے یہ جواب ملا کہ ہمارا کوئی کچھ نہیں بگاڑ سکتا ۔ہم اوپر تک حصہ دیتے ہیں ۔ عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے کہ اس چیز کا نوٹس لیا جائے اور فارمیسیز پر کوالیفائڈ فارماسسٹ کے ساتھ ساتھ ٹرینڈ عملہ کی موجودگی کو یقینی بنایا جائے اور غیر معیاری ادویات بیچنے والوں کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں