26

جھنگ CEO ہیلتھ اتھارٹی میں افسر شماریات طاہر کی اجارہ داری اپنا اصل کام چھوڑ کر دوسرے کاموں پر توجہ زیادہ نہ جانے کیوں ۔۔۔ سی ای او خاموش تماشائی ذرائع

جھنگ CEO ہیلتھ اتھارٹی میں افسر شماریات طاہر کی اجارہ داری اپنا اصل کام چھوڑ کر دوسرے کاموں پر توجہ زیادہ نہ جانے کیوں ۔۔۔ سی ای او خاموش تماشائی ذرائع
جھنگ(جاوید اعوان سے)جھنگ CEO ہیلتھ اتھارٹی میں افسر شماریات طاہر کی اجارہ داری اپنا اصل کام چھوڑ کر دوسرے کاموں پر توجہ زیادہ نہ جانے کیوں ۔۔۔ سی ای او خاموش تماشائی ذرائعِ کے مطابق طاہر کی تقرری بطور افسر شماریات ھوئی ھوئی ھے جس کا کام ڈیش بورڈ پر اپنی پراگریس اپ لوڈ کرنا ھے مگر موصوف اپنا سیٹ کا کام چھوڑ چھاڑ کر دوسرے کاموں میں زیادہ مصروف نظر آتے ہیں افسر شماریات تعمیراتی کاموں میں ضرورت سے زیادہ دلچسپی لیتے ہیں کیونکہ وھاں سے مال پانی ملتا ھے حالانکہ یہ انکی ڈیوٹی میں شامل نہیں ذرائع یہ بھی بتا رھے ہیں کہ موصوف بلڈنگ ڈیپارٹمنٹ کے ٹھیکیداروں سے فنڈوں والی لسٹ میں نام ڈالنے کی بھی اچھی خاصی فیس لیتے ہیں اور تو اور موصوف سی ای او ہیلتھ اتھارٹی کا نمائندہ بن کر زیر تعمیر اسکیموں کا وزٹ بھی کرتے ہیں اور وھاں سے میٹریل کے نمونے اکٹھے کرتے ہیں اور ٹھیکیداروں کو ان نمونوں کو لیبارٹری میں ٹیسٹ کی دھمکی دے کر اچھا خاصہ مال پانی اکٹھا کر رھا ھے اب نہ جانے سی ای او ہیلتھ اس چکر سے بے خبر ہیں یا پھر اس گیم میں وہ بھی شامل ہیں جب سی ای او ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر ظفرسیال سے موقف کے لیے انکے سرکاری موبائل پر کال کی گئی تو انکا موبائل آؤٹ آف رینج تھا ذرائع نے نام نہ شائع کرنے کی شرط پر بتایا کہ میری فرم کا نام فنڈز والی لسٹ میں نام ڈالنے کا 50000 روپے موصوف نے وصول کیے ہیں عوامی اور سماجی حلقوں نے چیف سیکریٹری پنجاب اور صوبائی سیکرٹری صحت پنجاب کمشنر فیصل آباد ڈویژن فیصل آباد اور محمد ارشد بھٹی ڈپٹی کمشنر جھنگ سے اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ھے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں