18

جھنگ ۔ ضلع بھر کی سڑکوں پر ویرانیوں کے ڈیرے ۔ روڈز پر جگہ جگہ پڑی گندگی کے ڈھیروں سے رونقیں برباد ۔ ہائی وے روڈز کھنڈرات کا منظر پیش کرنے لگے ۔ لنکس پکی سڑکیں تباہی کے دہانے پر ۔ روزانہ کی بنیاد پر روڈ ایکسیڈنٹ معمول بن چکے ہیں ۔ ضلعی انتظامیہ کی بے پروائی شہریوں کے لیے وبال جان بن گئی ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نوٹس لیں شہریوں کی دہائی ۔

جھنگ ۔ ضلع بھر کی سڑکوں پر ویرانیوں کے ڈیرے ۔ روڈز پر جگہ جگہ پڑی گندگی کے ڈھیروں سے رونقیں برباد ۔ ہائی وے روڈز کھنڈرات کا منظر پیش کرنے لگے ۔ لنکس پکی سڑکیں تباہی کے دہانے پر ۔ روزانہ کی بنیاد پر روڈ ایکسیڈنٹ معمول بن چکے ہیں ۔ ضلعی انتظامیہ کی بے پروائی شہریوں کے لیے وبال جان بن گئی ۔ وزیر اعلیٰ پنجاب نوٹس لیں شہریوں کی دہائی ۔
جھنگ (محمد جاوید اعوان) ضلع بھر کی اہم ترین شاہراہیں کھنڈرات میں تبدیل ۔ شہر کے تمام داخلی و خارجی پراونشل شاہراہوں پر جگہ جگہ پڑی گندگی کے ڈھیر ضلعی انتظامیہ کو منہ چڑ رھے ہیں ۔ سڑکوں پر کام کرنے والے بیلدار سیاسیوں کے ڈیروں پر تو کئی افسران کی کوٹھیوں پر کام کرنے پر مجبور ۔ تنخواہوں کی مد میں خزانہ سرکار کو کروڑوں روپے کا چونا ۔ کرپشن کے نشے میں دھت چیف سیکرٹری پنجاب کی آنکھیں بند ۔ پرویز الٰہی وزیر اعلیٰ پنجاب نوٹس لیں شہریوں کی اپیل ۔تفصیلات کے مطابق قدیم ترین ضلع جھنگ کرپٹ ترین بیورو کریسی کا شکار ہوتا تھا ھے ۔ مین سرگودھا روڈ ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہونے کے ساتھ ساتھ گندگی کے ڈھیروں کی زینت بن چکا ہے ۔ شہر کا اہم ترین کروڑوں روپے کی لاگت سے تعمیر کیا گیا رنگ روڈ بائی پاس دس دس فٹ گہرے گڑھوں کا شکار ہو کر رہ گیا ہے ۔ جگہ جگہ گندگی اور کوڑے کرکٹ کے ڈھیر ضلعی انتظامیہ کے کالے کرتوتوں کی عکاسی کرتے دکھائی دیتے ہیں ۔ بھکر روڈ پر گندگی کے ڈھیر موجود ہیں ۔ ٹوبہ روڈ کوڑے کرکٹ روڈ کے نام سے مشہور ہو گیا ہے ۔ مین گوجرہ روڈ تو سبحان اللہ تیری قدرت ڈپٹی کمشنر کی طرف سے پھولوں کی جگہ مسکٹ/جنگلی کیکروں کی سپیشل پلانٹیشن کے ساتھ ساتھ روڈ کے ساتھ ساتھ ضلع بھر کے کوڑے کرکٹ اکٹھے کر کے اہم ترین روڈز کے ساتھ ساتھ دوسرے شہروں سے آنے والے خاص طور پر وزراء مشیر ۔ اعلیٰ بیورو کریٹ کے لیے تفریح کا ماحول پیدا کرنے کے لیے گھناؤنے کھیل کھیلے جاتے ہیں ۔ ہمارے جھنگ کے نومنتخب سیاسی بھی خاموش تماشائی کا کردار بن گئے ہیں ۔ فیصل آباد روڈ پر بھی جگہ جگہ گہرے گڑھے ضلعی انتظامیہ کے لیے لمحہ فکریہ ہیں ۔ جس پر عوامی وسماجی کاروباری وکلاء صحافتی تنظیموں نے چوہدری پرویز الٰہی وزیر اعلیٰ پنجاب سمیت دیگر اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے کا پرزور مطالبہ کیا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں