42

وہاڑی(نمائندہ سٹی ون نیوز)۔منشیات کیس میں لاکھوں روپے کی دیہاڑی لگانےوالا تھانیدار DPO وھاڑی نے معطل کر دیا۔ مزید تفصیلات کے لیے لنک پر کلک کریں

وہاڑی(نمائندہ سٹی ون نیوز)۔منشیات کیس میں لاکھوں روپے کی دیہاڑی لگانےوالا تھانیدار DPO وھاڑی نے معطل کر دیا۔ مزید تفصیلات کے لیے لنک پر کلک کریں
اس ضمن میں آرپی او ملتان سیدخرم علی اور ایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب کیپٹن ظفراقبال اعوان کی توجہ اس جانب مبذول کراتے ہیں کہ سب انسپکٹر شہباز کی معطلی بہت کم سزا ہے برآمد شدہ منشیات کامقدمہ ایس ایچ او اور سب انسپکٹر مذکور پردیاجائے تاکہ انہیں احساس ہو کہ کس طرح بےگناہ کو جیل اور کس طرح گناہگار کو پیسے لےکر چھوڑا جاتاھے#

یادرہے کہ کل صدر پولیس کے سب انسپکٹر شہباز نے علی الصبح 49wb میں ریڈ کے دوران مشہور منشیات فروش اعجاز کھوکھر کو ہیروئن(snow) سمیت گرفتار کیا تھا جسے SHo مہر پرویز کی ہدایت پر مک مکا کرنے کیلئے تھانیدار کے کوارٹر پر لیجایا گیا۔

شہباز si کے ٹاوٹ ٹائپ ذاتی ملازم فرنٹ مین ساجد لاہوری نے گرفتار منشیات فروش کی طے کرائی جس میں 3لاکھ 60 ہزار روپے دیکر اعجاز کے ذمے اپنے متبادل کسی اور منشیات فروش کو بھی پکڑوانا تھا۔

اعجاز کھوکھر کی انفارمیشن پر تھانیدار نے آصف اوڈ اور ساجد لاہوری وغیرہ کیساتھ 11-9 میں ایک فیصل آبادی کے گھر چھاپہ مار کر اسے گرفتار کیا جس سے دوران تلاشی ساڑھے 21کلو چرس کے 17 پیکٹ برآمد ہوئے جبکہ اعجاز کھوکھر کو پیسے لیکر چھوڑ دیا۔

اسی دوران مک مکا کی خبر عام ہوئی تو پولیس نے 11-9 سے پکڑی گئی آدھا من چرس میں سے 3 کلو کا پرچہ اعجاز کھوکھر کے بیٹے سکندر پر درج کرکے اسے جیل بھیج دیا جبکہ 4پیکٹ 5 کلو چرس کا اعجاز کھوکھر پر درج کرکے فرارظاہر کردیاگیا۔ واقعہ کا علم ہوتے ہی DPO امیرعبداللہ خان نیازی نے کرپٹ سب انسپکٹر شہباز کو معطل کر کے انکوائری کا حکم دے دیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں