75

جھنگ(محمد جاوید اعوان) گوجرہ روڈ ریلوے پھاٹک کے قریب میونسپل کارپوریشن کی جانب سے رکشہ پر بیس روپے ٹیکس ادا نہ کرنے پر ٹھیکیدار کے بندوں کی جانب سے غنڈہ گردی ڈرائیور کا بازو کاٹ دیا کوئی کاروائی نہ ہو سکی مزید تفصیلات کے لیے لنک پر کلک کریں

جھنگ(محمد جاوید اعوان) گوجرہ روڈ ریلوے پھاٹک کے قریب میونسپل کارپوریشن کی جانب سے رکشہ پر بیس روپے ٹیکس ادا نہ کرنے پر ٹھیکیدار کے بندوں کی جانب سے غنڈہ گردی ڈرائیور کا بازو کاٹ دیا کوئی کاروائی نہ ہو سکی مزید تفصیلات کے لیے لنک پر کلک کریں
تفصیلات کے مطابق گوجرہ روڈ ریلوے پھاٹک کے قریب بیس روپے ٹیکس نہ ادا کرنے پر رکشہ ڈرائیور کو مار مار کر زخمی کرکے اسکا بازو کاٹ دیا گیا 26 سالہ محمد اشرف جو کہ چنگچی رکشہ کا ڈرائیور تھا اور مزدوری کرنے کے لئے ابھی گھر سے نکلا ہی تھا کہ وحشی درندہ صفت ٹھیکیدار کے بندے نے اسکو روکا اور 20 روپے ٹیکس ادا کرنے کا کہا ڈرائیور نے کافی منت سماجت کی کہ ابھی میری جیب میں پیسے نہیں ہیں میں اگلے چوک تک ادا کر دوں گا لیکن ٹھیکیدار کے بندے جو کہ مختلف سڑکوں کے وسط میں بڑے بدمعاش بن کر رکشے روکتے ہیں اور ٹیکس لیتے ہیں ٹھیکیدار کے بندے نے ڈرائیور کو پہلے تو گالیاں دی اور پھر اسکو مار مار کر اسکا بازو کاٹ دیا اور بڑے فخر سے سبکو کہنے لگا کہ یہ اس ڈرائیور کو میں نے مارا ہے جو کرنا ہے کر لو ذرائع سے معلوم ہوا کہ اس شخص کے پس پردہ کسی بااثر شخصیات کا ہاتھ ہے جسکی وجہ سے یہ شخص سرعام بدمعاشوں کی طرح رکشے روکتا اور ان سے ٹیکس وصول کرتا ہے اس شخص کے خلاف تاحال نہ ہی تو پولیس نے کارروائی کی ہے اور نہ ہی ضلعی انتظامیہ نے کوئی نوٹس لیا ہے ذرائع نے یہ بھی بتایا کہ زخمی ہونے والا ڈرائیور نہایت ہی غریب شہری ہے جو کہ کسی دوسرے شخص کا رکشہ چلا کر اپنا اور گھر والوں کا پیٹ پالتا ہے عوامی سماجی حلقوں اور شہریوں نے وزیراعظم پاکستان وزیر اعلیٰ پنجاب آئی جی پنجاب آر پی او فیصل آباد کمشنر فیصل آباد ڈی سی جھنگ ڈی پی او جھنگ سے بدمعاشی کرنے والے بااثر شخص کے خلاف کارروائی کرنے اور اسکو سخت سزا دینے کا مطالبہ کیا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں