50

اٹک (نمائندہ سٹی ون نیوز)پی پی پی کے سابق رکن پنجاب اسمبلی ملک شاہان حاکمین خان قاتلانہ حملے میں سر پر گولی لگنے سے جاں بحق ۔ مزید تفصیلات کے لیے لنک پر کلک کریں

اٹک (نمائندہ سٹی ون نیوز)پی پی پی کے سابق رکن پنجاب اسمبلی ملک شاہان حاکمین خان قاتلانہ حملے میں سر پر گولی لگنے سے جاں بحق ۔ مزید تفصیلات کے لیے لنک پر کلک کریں

سابق رکن پنجاب اسمبلی ملک شاہان حاکمین خان پر نماز جنازہ کے دوران آبائی گاءوں شیں باغ میں قاتلانہ حملہ ۔
ملک شاہان حاکمین خان کو گولی مارنے والا ان کے سوتیلے بھائی ملک محمد آصف کا 19 سالہ بیٹاملک شیر دل حاکمین بتایا جاتا ہے*۔

ملک شاہان حاکمین خان کو زخمی حالت میں ریسکیو 1122 کی ایمبولینس میں راولپنڈی ہسپتال ریفر کر دیا ۔

ملک شاہان حاکمین خان کو ریسکیو 1122 کی ایمبولینس میں راولپنڈی ہسپتال لے جانے والوں میں سابق امیدوار پنجاب اسمبلی ملک حمید اکبر خان بھی شامل ہیں ۔

ملزم واردات کے بعد موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ۔

ملک شاہان حاکمین خان قریبی عزیز کے جنازے میں شریک تھے ۔

خون زیادہ بہہ جانے کے سبب ملک شاہان حاکمین خان کو راولپنڈی ہسپتال ریفر کیا جا رہا تھا تاہم ہسپتال کے گیٹ پر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے ۔
مرحوم سابق رکن پنجاب اسمبلی ملک شاہان حاکمین خان کی میت کو راولپنڈی سے واپس اٹک ریسکیو 1122 کی ایمبولینس میں لایا جا رہا ہے ۔
اے ایس پی اٹک جواد اسحاق اور ایس ایچ او تھانہ صدر اٹک جاوید اقبال اطلاع پر ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال اٹک پہنچ گئے تھے ۔
ملزم کو جلد از جلد گرفتار کر کے قانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا ۔ ڈی پی او اٹک سید خالد ہمدانی
ملک شاہان حاکمین خان ، سابق وزیر جیل خانہ جات ، ہاءوسنگ فزیکل پلاننگ خوراک پنجاب سینیٹر ملک حاکمین خان مرحوم کے بیٹے تھے ۔
سینیٹر ملک حاکمین خان ذوالفقار علی بھٹو کے دور حکومت میں نصف درجن محکموں کے وزیر اور اس حلقہ سے 3 مرتبہ رکن پنجاب اسمبلی منتخب ہونے کے علاوہ سینیٹ آف پاکستان کے رکن بھی رہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں