52

جھنگ (محمد جاوید اعوان) جھنگ میں کورونا وائرس خطرناک صورتحال اختیار کر گیا ڈی ایچ کیو ہسپتال مریضوں سے بھر گیا ڈی ایچ کیو ہسپتال میں سال بھر سے پڑے ھوئے وینٹیلیٹرز فعال نہ ہو سکے

جھنگ (محمد جاوید اعوان) جھنگ میں کورونا وائرس خطرناک صورتحال اختیار کر گیا ڈی ایچ کیو ہسپتال مریضوں سے بھر گیا ڈی ایچ کیو ہسپتال میں سال بھر سے پڑے ھوئے وینٹیلیٹرز فعال نہ ہو سکے عملہ کو گذشتہ سال ٹریننگ بھی دی گئی لیکن وینٹیلیٹرز کو پیک کر کے رکھا ہوا ھے جنوری 2021 میں جب کورونا کی لہر آئی تو میڈیا نے اس تکلیف دہ صورتحال کو اجاگر کیا تو اعلی حکام کے نوٹس کے بعد اس وقت کے ایم ایس ڈاکٹر ارتضی شاہ نے کہا کہ صرف کورونا کے مریضوں کے لیے وینٹیلیٹرز فعال کر دیے ہیں لیکن یہ صرف کاغذوں تک محدود رہا اور وینٹیلیٹرز نہ فعال ہوئے اب کورونا کی پھر خطرناک صورتحال کے باعث وینٹیلیٹرز کا فعال نہ ہونا انتہائی خطرناک ہے جو کئی افراد کی جان لے گا الاہیڈ ہسپتال کے سنیر ڈاکٹر نے بتایا کہ جب کورونا آیا تو تمام ہسپتالوں کو وینٹلی لیٹر کے ساتھ عملہ کو ٹریننگ دی گئی لیکن کام چوری کی وجہ سے ڈسٹرکٹ کی سطح پر فعال نہ ہوئے جبکہ تمام ہسپتالوں کے سربراہوں نے اوپر یہ رپورٹ دی ہے کہ وینٹیلیٹرز چالو ہیں لیکن صرف کاغذوں تک سینر ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ یہی بات کسی بھی ایم ایس سے تحریری طور پر کہی جائے کہ لکھ کر دیں کہ وینٹیلیٹرز فعال نہ ہیں نہ چلنے کے باوجود کسی بھی صورت میں ایم ایس نہیں لکھ دے گا کیونکہ کاغذوں میں چل رہے ہیں اور عملہ بھی تربیت لے چکا ہے چیف سیکرٹری پنجاب سیکرٹری صحت کمشنر فیصل آباد ڈی سی جھنگ سی ای او ہیلتھ جھنگ ایم ایس ڈی ایچ کیو جھنگ اس خطرناک صورتحال میں فوری وینٹیلیٹر فعال کروائیں اور تربیت شدہ عملہ تعینات کرروائیں جبکہ سیکرٹری صحت پورے پنجاب میں جہاں جہاں وینٹلیٹر موجود ہیں فعال کروائے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں