15

آج جہانیاں پریس کلب جہانیاں میں روزنامہ نیا کل ملتان کے کوارڈینیشن اڈیٹر فیاض طفیل نے پریس کانفرنس کی جس میں دو ہفتے پہلے ہونے والے قاتلانہ حملے کے بارے صحافیوں کو بتایا

آج جہانیاں پریس کلب جہانیاں میں روزنامہ نیا کل ملتان کے کوارڈینیشن اڈیٹر فیاض طفیل نے پریس کانفرنس کی جس میں دو ہفتے پہلے ہونے والے قاتلانہ حملے کے بارے صحافیوں کو بتایا انہوں نے کہا کہ ایف آئی آر میں ڈی ایس پی جہانیاں اور ایس ایچ او جہانیاں نے ملزمان کو نہ صرف ریلیف دیا بلکہ طرفداری شروع کر رکھی ہے ایف آئی آر ہونے کے 13 یوم گزر جانے کے باوجود پولیس ملزمان کو گرفتار کرنے میں ناکام رہی ہے ساتھ یہ بھی کہ پولیس نے سفارشی فون پر گھر گھس کر فائرنگ کرنے چار دیواری کا تقدس پامال کرنے آتشی اسلحہ کی نمائش کرنے ملزمان کی طرف سے قتل کر دینے کے لیے للکارنے جیسی سنگین دفعات اور صحافی سیفٹی ایکٹ جان بوجھ کر نہیں لگائی اور ملزمان کو ریلیف دینے کی کوشش کی ہے انہوں نے پریس کانفرنس کے ذریعے آر پی او ملتان ، ایڈیشنل آئی جی جنوبی پنجاب ، چیف سیکرٹری پنجاب سے مطالبہ کیا ہے کہ ملزمان کی گرفتاری بارے خصوصی احکامات جاری فرمائیں جبکہ اس موقع پر جہانیاں پریس کلب جہانیاں کے میٹنگ ہال میں تحصیل پریس کلب جہانیاں ، ٹبہ سلطان پور پریس کلب ، ٹھٹھ صادق آباد پریس کلب ،چوک میتلا پریس کلب ، نیشنل پریس کلب جہانیاں ، جہانیاں پریس کلب جہانیاں کے صدور ، جنرل سیکرٹری صاحبان اور دیگر عہدیداروں کے ساتھ ساتھ ممبران پریس کلب نے بھی شرکت کی بعدازاں جہانیاں پریس کلب جہانیاں کے باہر ایک مشترکہ صحافی اتحاد کی جانب احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں آر پی او ملتان ، ڈی پی او خانیوال سے مطالبہ کیا گیا کہ صحافیوں کی حفاظف یقینی بنائی جائے اور فیاض طفیل کے قاتلانہ حملے میں ملوث افراد کو فوری طور پر گرفتار کیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں