70

فیصل آباد(رانا محمد لطیف بیورو چیف )ایک طرف غربت اور بے لگام مہنگائی کے اژ دھے نے غریب مریضوں کا جینا دوبھر کر رکھا ہے تو دوسری جانب عطائی ڈاکٹروں نے بھی سفاکیت کی انتہا کر دی

فیصل آباد(رانا محمد لطیف بیورو چیف )ایک طرف غربت اور بے لگام مہنگائی کے اژ دھے نے غریب مریضوں کا جینا دوبھر کر رکھا ہے تو دوسری جانب عطائی ڈاکٹروں نے بھی سفاکیت کی انتہا کر دی ہے،اندھیر نگری چوپٹ راج کوئی پوچھنے والا نہیں۔ہائے تبدیلی سرکار تنگ دست لوگوں کے لیے امید کی کرن نہ بن سکی ۔80ہزار روپے خرچ کرنے کے باوجود تنگ دست بھٹہ مزدور کی بیوی پروین بی بی پرائیویٹ منور ہسپتال کے ظلم کا شکار ہو گئی اورانصاف کے لیے دربدر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور ہے،،آپریشن کے دوران ڈاکٹر نے پروین بی بی کے مثانے کوٹک لگادیا جس کی وجہ سے پروین بی بی چلنے پھرنے سے لاچارہوگئیں مثانے کی شدیدتکالیف کے باعث منورہسپتال دوبارہ چیک اپ کروایا جس پر پروین بی بی سے بدتمیزی اور دھمکیاں دی گئیں پروین بی بی نے کہا ہم غریب لوگ ہیں رینٹ کے مکان میں رہتے ہیں میراشوہر اینٹوں کے بھٹے پرمزدوری کرتاہے ہمارے گھر کاگزربسرمشکل سے ہوتاہےجس کی وجہ سے ہم علاج کے لیے اخراجات نہیں اٹھا سکتے اس لیے سی پی او ،ڈی سی اور قانون نافذ کرنے والے اداروں اعلی حکام سے انصاف کی اپیل ہے اور ہماری مدد کی جائے ۔تھانہ ٹھیکریوالہ کے علاقے پینسرہ میں واقع منورہسپتال کے ڈاکٹرزنماقصاب انسانی جانوں کے دشمن بن گئے ظلم کی انتہاچار ماہ قبل پروین بی بی زوجہ محمدافضل نے منورہسپتال سے رسولی کااپریشن کروایاجس کا 80 ہزارروپے لیاگیا جس کی کوئی میڈیکل رپورٹ بھی نہ دی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں