28

جھنگ ۔(محمد جاوید اعوان) عجب حکمتِ عملی اپناتے چوروں کی مار دھاڑ ۔ بھکاریوں کے بھیس بدل کر تو کئی مختلف اشیاء کی فروخت کرنے کا بہانہ بناتے ہیں کئی کاریگروں کا روپ دھار کر موٹرسائیکلوں پرسپیکر کے ذریعے مختلف الیکٹرانک سامان کی مرمت کے ڈرامے رچا کر پھرنے والےاب بھیڑ ۔ بکرے ۔ چھوٹے ویہڑے چوری اٹھا کر رفو چکر ہونے میں کامیاب ہو جاتے ہیں ۔ اور آئے روز شہری لاکھوں روپے مالیت کے قیمتی جانورں سے ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں

جھنگ ۔(محمد جاوید اعوان) عجب حکمتِ عملی اپناتے چوروں کی مار دھاڑ ۔ بھکاریوں کے بھیس بدل کر تو کئی مختلف اشیاء کی فروخت کرنے کا بہانہ بناتے ہیں کئی کاریگروں کا روپ دھار کر موٹرسائیکلوں پرسپیکر کے ذریعے مختلف الیکٹرانک سامان کی مرمت کے ڈرامے رچا کر پھرنے والےاب بھیڑ ۔ بکرے ۔ چھوٹے ویہڑے چوری اٹھا کر رفو چکر ہونے میں کامیاب ہو جاتے ہیں ۔ اور آئے روز شہری لاکھوں روپے مالیت کے قیمتی جانورں سے ہاتھ دھو بیٹھتے ہیں ۔ چوروں نے یہ سلسلہ تقریباً ایک ماہ سے شروع کر رکھا ہے ۔ جبکہ مقامی پولیس سابقہ روٹین کو برقرار رکھتے ہوئے ملزمان کو مکمل ریلیف دینے میں مصروف دکھائی دیتی ہے ۔ مقام افسوس اس امر کا ہے کہ عوام کے جان و مال کی حفاظت کی ضمانت کے جھوٹے دعویدار پنجاب پولیس فقط عوام کے ٹیکسوں سے تنخواہیں اور ٹی اے ڈی اے سمیت دیگر جدید ٹیکنالوجی کی مد میں اخراجات کابہانہ تراش کر جی بھر کے پیٹ بھرنے تک محدود ھے ۔ جبکہ غریب عوام کو بےیارومددگار چوروں اور ڈاکوؤں کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا ھے ۔ جس پر لٹتے شہریوں کے علاؤہ عوامی سماجی کاروباری حلقوں نے وزیر اعلی پنجاب ۔ آئی جی پنجاب پولیس سمیت دیگر اعلیٰ حکام سے فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں