46

جھنگ کے میڈیکل سٹورز پر کھلے عام نشہ آور ادویات کی فروخت جاری درجنوں میڈیکل سٹورز بغیر لائسنس کے چل رہے ہیں سی ای او ہیلتھ اور اسکا ماتحت عملہ چین کی بانسری بجا رھا ھے عوامی حلقے

جھنگ کے میڈیکل سٹورز پر کھلے عام نشہ آور ادویات کی فروخت جاری درجنوں میڈیکل سٹورز بغیر لائسنس کے چل رہے ہیں سی ای او ہیلتھ اور اسکا ماتحت عملہ چین کی بانسری بجا رھا ھے عوامی حلقے
جھنگ (بیورو رپورٹ ) جھنگ کے میڈیکل سٹورز پر کھلے عام نشہ آور ادویات کی فروخت جاری درجنوں میڈیکل سٹورز بغیر لائسنس کے چل رہے ہیں سی ای او ہیلتھ اور اسکا ماتحت عملہ چین کی بانسری بجا رھا ھے ذرائع کے مطابق خاص کر بڑے پرائیوٹ ہسپتالوں کے میڈیکل سٹورز بغیر لائسنس کے ساتھ ساتھ وہاں سیمپل اور فلیٹ ریٹ ادویات فروخت ہوتی ہیں جبکہ 99 فی صد میڈیکل سٹورز کرائے کے لائسنسوں پر ہیں ڈرگ انسپکڑز صرف دیہاتی علاقوں میں زیادہ کاروائی کرتے ہیں۔جبکہ سب سے بڑے مافیا بڑے پرائیوٹ ہسپتالوں کے اندر فارمیسی والے ہیں جو بغیر لائسنس کے چلتے ہیں قانون کے مطابق ان کا لائسنس بھی ضروری ہے مگر وہ یہ شو کرتے ہیں کہ ڈاکٹر کی فارمیسی ہے حالانکہ ایسا بالکل نہیں ڈاکٹرز نے ماہانہ لاکھوں روپے کرایہ پر دیے ہیں اور سیمپل اور فلیٹ ریٹ ادویات سے لوگوں کو لوٹا جا رہا ہے جبکہ شہر کے اکثر میڈیکل سٹورز پر نشہ آور ادویات فروخت ہورہی ہے متعلقہ ڈرگ انسپکٹر کا کہنا ہے کہ ہماری کوشش ہے جہاں اطلاع ملے کاروائی کرتے ہیں۔لیکن ہمارا معاشرے کا نظام ہی ایسا ہے کہ ابھی سیل کیا نہیں کہ ساتھ ہی سیاسی پریشر اور دیگر سفارشات شروع ہو جاتی ہیں پرائیوٹ ہسپتالوں میں واقعی میڈیکل سٹور بغیر لائسنس کے چل رہے ہیں وہاں ڈاکٹرز کی سفارش آجاتی ہے میری تو ہر ممکن کوشش ہے اور میرے ہاتھ صاف ہیں۔مجھے نشاندہی کریں میں فوری کاروائی کرونگی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں