30

جھنگ : ماہ مقدس محرم الحرام میں پنجاب حکومت کی جانب سے امن و امان برقرار رکھنے اور شرپسندوں کو لگام دینے کے لیے فوری طور پر 10 دن کیلئے دفعہ 144 کا نفاذ کر دیا گیا ھے ۔ ذرائع

جھنگ : ماہ مقدس محرم الحرام میں پنجاب حکومت کی جانب سے امن و امان برقرار رکھنے اور شرپسندوں کو لگام دینے کے لیے فوری طور پر 10 دن کیلئے دفعہ 144 کا نفاذ کر دیا گیا ھے ۔ ذرائع
جھنگ (بیورو رپورٹ ) وزارت داخلہ پنجاب نے ماہ محرم الحرام کے مقدس ایام میں پورے ملک کی طرح پنجاب بھر میں امن و امان اور بھائی چارے کے فروغ کیلئے دفعہ 144 کا نفاذ کر دیا ھے جس کے تحت لاؤڈ سپیکر کا استعمال محدود ہو گا ، مجالس چار دیواری کے اندر ہونگی، جلوس کے روٹ کے علاوہ جلوس نکالنے کی اجازت ہرگز نہ ہو گی ، سر عام اسلحہ کی نمائش پر سخت پابندی ہو گی اور لائسنس والے اسلحہ کو بھی کیری پرمٹ کے علاوہ نکالنے پر سخت کاروائی ہو گی ۔رات 10 بجے کے بعد سڑکوں اور بازاروں میں رش کی اجازت نہ ہو گی ۔ موٹر سائیکل پر ڈبل سواری کی پابندی 9 اور 10 محرم کو ہو گی جبکہ خواتین ، بزرگ اور صحافی اس پابندی سے مستثنیٰ ہونگے۔ ۔صحافیوں کو اپنے ادارے کے صحافتی کارڈ ساتھ ہونے پر مجالس کی محدود کوریج کی اجازت ہو گی ۔ لائیو کوریج کی اجازت نہ ہے کیونکہ اس سے پورے ملک میں چھوٹی سی بات پر بھی خوف و ہراس پھیل جاتا ہے ۔وزارت داخلہ نے ضلعی انتظامیہ کو ہدایات دی ہیں کہ مقدس ایام میں امن و امان کیلئے امن کمیٹیوں ، انجمن تاجران ، چیمبر آف کامرس اور مذہبی و سیاسی رہنماؤں کو ساتھ لے کر چلے ۔ کسی بھی قسم کی گڑ بڑ کی صورت میں پاک فوج اور رینجرز کو طلب کیا جا سکتا ہے۔تمام محکموں جن میں بلدیہ ، ریسکیو 1122 ، واپڈا ، سوئی گیس ، بم ڈسپوزیبل سکواڈ اور سول ڈیفنس وغیرہ کو ہائی الرٹ جاری کر دیا گیا ہے ۔مجلسں انتظامیہ کو ہدایت جاری کی گئی ہیں کہ بجلی کے متبادل ذرائع کا بندوست کریں اور مجلس میں خواتین و حضرات کو چیکنگ کر کے اندر جانے دیا ۔تمام مجالس انتظامیہ کو واضح ہدایت دی گئی ہے کہ ان ذاکرین و علماء کرام جن پر حکومت نے جھنگ میں داخلے پر پابندی عائد کی ہے ان کو مجلس پر بلانے پر انکے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی۔ فورتھ شیڈول افراد اور افغان ٹرینڈ نوجوانوں پر خصوصی نگرانی کی جائے گی ۔مشکوک افراد کی اطلاع قریبی تھانوں میں دیکر ذمہ دار شہری ہونے کا ثبوت دیں ۔ ضلع انتظامیہ نے بھی اپنے محرم پلان میں ان تمام ہدایات کو پہلے ہی شامل کر کے انتظامات مکمل کر لیں۔ انتظامیہ پوری طرح متحرک ہے تا کہ ان ایام میں کوئی شرپسند پبلک کی سلامتی کو نقصان نہ دے سکے ۔حکومت نے تمام مسالک کے لوگوں کو پیغام دیا ہے کہ ان مقدس ایام کو بھائے چارہ سے منائے تا کہ دنیا اور دشمن کو یہ پیغام جائے کہ ہم پر امن اور اچھے مسلمان ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں