34

ڈاکٹر نوید صفدر MS ٹی ایچ کیو ہسپتال شور کوٹ کی اپنے عملے پر کمزور گرفت یا کچھ اور ۔۔۔۔۔۔ جعلی اور دو نمبر میڈیکو لیگل سرٹیفکیٹ جاری کرنے والی ڈاکٹر ماریہ امداد کے بعد اب ڈاکٹر مبشر اور ڈاکٹر ساجد بھی میدان میں آ گئے

ڈاکٹر نوید صفدر MS ٹی ایچ کیو ہسپتال شور کوٹ کی اپنے عملے پر کمزور گرفت یا کچھ اور ۔۔۔۔۔۔
جعلی اور دو نمبر میڈیکو لیگل سرٹیفکیٹ جاری کرنے والی ڈاکٹر ماریہ امداد کے بعد اب ڈاکٹر مبشر اور ڈاکٹر ساجد بھی میدان میں آ گئے

جھنگ(بیورو رپورٹ) ڈاکٹر نوید صفدر MS ٹی ایچ کیو ہسپتال شور کوٹ جب سے اس ہسپتال میں تعینات ھوئے ہیں ہسپتال کا بیڑا ھی غرق ھو گیا ھے ہر قسم کی پرچیز پر کمیشن فکس کر دیا گیا ھے ہسپتال کے ایک اہلکار نے نام شائع نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ ڈاکٹر نوید صفدر نے ہر قسم کے کاغذ پر دستخط کرنے کی فیس مقرر کی ھوئی ھے جو کہ ان کے دست راست وصول کرتے ہیں اور ڈاکٹر صاحب سے کاغذات دستخط کروا کر دیتے ہیں انکی ہسپتال میں اور کوئی ڈیوٹی نہیں بس وہ یہی ڈیوٹی سر انجام دیتے ہیں اور شام کو ڈاکٹر صاحب کے ساتھ ھی واپس چلے جاتے ہیں میڈیا ٹیم ان پر بھی کام کر رھی ھے جلد ھی ان احباب کے نام اور عہدے بھی منظر عام پر لائے جائیں گے۔ اس سے پہلے میڈیا ٹیم نے ڈاکٹر ماریہ امداد DMS تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال شور کوٹ کے جعلی اور دو نمبر میڈیکو لیگل سرٹیفکیٹ کے بارے میں خبر شائع کی تھیں کہ موصوفہ کے جعلی اور دو نمبر میڈیکو لیگل سرٹیفکیٹ کی وجہ سے مقدمہ درج ھونے کے بعد ملزمان تقریباً 15/16 دن جیل کی ھوا کھا چکے ہیں اب موصوفہ ڈاکٹر ان ملزمان کے والدین اور عزیز و اقارب پر سیاسی پریشر ڈال کر معاملہ رفع دفع کروانے کی کوشش میں لگی ھوئی ھے اسکے بعد جب باقی ڈاکٹر صاحبان نے دیکھا کہ ڈاکٹر ماریہ امداد کا کچھ نہیں بنا اور یہ جعلی اور دو نمبر میڈیکو لیگل سرٹیفکیٹس کا دھندا اچھا ھے تو ڈاکٹر مبشر اور ڈینٹل سرجن ڈاکٹر ساجد نے بھی جعلی اور دو میڈیکو لیگل سرٹیفکیٹ جاری کر دیا ہسپتال سے ایکسرے بھی نہیں کروایا اور پرائیوٹ ایکسرے پر ھی جبڑا ٹوٹنے کا میڈیکو لیگل سرٹیفکیٹ جاری کر دیا عوامی اور سماجی حلقوں نے یہ سوال کیا ھے کہ آیا یہ سارا کچھ MS کی آشیر باد کے بغیر ھو سکتا ھے
جب ایم ایس تحصیل ہیڈکوارٹر ہسپتال شور کوٹ ڈاکٹر نوید صفدر اور ایم او ڈاکٹر مبشر اور ڈینٹل سرجن ڈاکٹر ساجد سے موقف کے لیے رابطہ کیا گیا تو ان سے رابطہ نہ ھوسکا عوامی اور سماجی حلقوں نے وزیر اعلی پنجاب چوہدری پرویز الٰہی صوبائی وزیر صحت اور سیکریٹری پرائمری اینڈ سیکنڈری ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ کمشنر فیصل آباد ڈویژن اور ڈپٹی کمشنر جھنگ احمد کمال مان اور چیف ایگزیکٹو آفیسر ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر منظور حسین سے اصلاح احوال کی اپیل کی ھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں