32

لانگ مارچ جاری ھے اصل مارچ تو جب اسلام آباد داخل ھوگی تب شروع ھوگا

لانگ مارچ جاری ھے اصل مارچ تو جب اسلام آباد داخل ھوگی تب شروع ھوگا حکومت کو اتنی امید نہ تھی لیکن۔عمران خان سے عوام کی محبت ھے لاہور سے راولپنڈی اور پشاور سے راولپنڈی جی ٹی روڈ پر کوئی جگہ نہیں جہاں آبادی نہ ھو خاص کر لاہور سے پنڈی شہر شہر اور راستے میں شاپنگ مال ملز ہوٹل مارکیز تمام شہر لاہور سے نکلیں تو فیروزوالا کامونکی گوجرانوالہ لالہ موسی گھگھڑ منڈی گجرات کھاریاں سرائے عالمگیر جہلم دینہ سوہاوہ گوجر خان تحصیل و اضلاع جی ٹی روڈ پر ہیں سب کے سب امیر۔ تحصیل و اضلاع اس لیے جگہ جگہ سے قافلے لوگ ملے گے پنڈی تک لانگ مارچ مکمل کامیاب ہوگا اسی طرح پشاور سے پنڈی تک اٹک نوشہرہ جہانگہرہ حسن ابدال ٹیکسلا کامرہ واہ کینٹ قبل۔ذکر ہیں سب آبادی والے شہر ہیں کے ہی کی اور پنجاب میں ہی ٹی آئی کی۔حکومت ہے۔اس لیے پنڈی تک دونوں طرف سے آنے میں کوئی۔مشکل نہیں ہوگی فوج کی طرف سے ڈی جی آئی ایس آئی کا آنا کوئی معمولی بات نہ۔تھی بہت بڑی بات تھی فیصل ڈڈو کا ہریس کانفرنس کرنا پی ٹی آئی کو نہ ڈرا سکا الٹا اور جوش و جذبہ آگیا جب مارچ اسلام آباد داخل ہوگا تو کہانی شروع ہوگی اب فوج نے بھی ساری صورتحال دیکھ لی ہے الیکشن کے علاوہ حل۔نہیں۔ورنہ ادارے مزید بدنام ہوگے حکومت صرف آرمی چیف کی تعیناتی تک انتظار میں ہے جیسے ہی آرمی چیف کا اعلان ہوجائے گا نئے حکومت بھی اور نئے آرمی چیف بھی یہی چاہے گے الیکشن کا اعلان ہو جبکہ عمران خان آرمی چیف کی تعیناتی سے پہلے حکومت کو چلتا کرنا چاہتے ہیں۔یہی اب اصل کہانی ہے مذاکرات بھی ہو سکتے ہیں بہرحال اب پی ٹی آئی پر منحصر ہے جیسے پہلے ڈٹ چکی ہے اگر اسلام آباد میں ڈٹ جاتی ہے تو کامیابی سامنے ہے اگر کسی سازش کا شکار کسی چال میں آگئی تو الیکشن بھی وقت ہر ہونگے اور پی ٹی آئی کو سیاسی نقصان بھی بہت ہوگا اب یہ اسلام آباد میں قیام ہی ان کی زندگی موت ہے

تحریر مہر نوید احمد خان سدھانہ سیال سیکرٹری ڈسٹرکٹ پریس کلب جھنگ 03458502003

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں