64

اسد عمر چرچی گراؤنڈ اور شیخ محمد یعقوب( تحریر علی امجد چوہدری)

اسد عمر چرچی گراؤنڈ اور شیخ محمد یعقوب( تحریر علی امجد چوہدری)
تحصیل احمد پور سیال تحصیل شورکوٹ اور تحصیل اٹھارہ ہزاری کا دلچسپ احوال تو ہوگا ہی(کل انشاء اللہ ) مگر ان سب سے دلچسپ احوال چرچی گراؤنڈ جھنگ کا ہے اس عمر سرشام چرچی گراؤنڈ پہنچے جہاں ان کا خیال تھا کہ چرچی گراؤنڈ کھچا کھچ بھرا ہوا ہوگا اسد عمر دے نعرے وجن گے سے گونج رہا ہوگا اسد عمر صاحب یہ تصور لیئے جھنگ میں داخل ہوئے ہونگے کہ مسلسل چار الیکشن جیتنے والی اور ریکارڈ قائم کرنے والی خاتون محترمہ غلام بی بی بھروانہ اتنی مقبول ہونگیں کہ سٹیڈیم کے اطراف میں تل دھرنے کی جگہ نہیں ہوگی یہی تصور لیئے جب اسد عمر چرچی گراؤنڈ پہنچے تو وہاں ہو کا عالم تھا اکا دکا نعرے بجانے والے ضرور موجود تھے اور پھر اسد عمر صاحب ارد گرد کے چلتے موبائلز سے بے خبر ایسے برسے کہ چار بار مسلسل رکن قومی اسمبلی منتخب ہونے والی محترمہ غلام بی بی بھروانہ بھی وضاحتیں دیتی رہ گئیں اور سابق صوبائی وزیر رائے تیمور حیات بھٹی بھی منہ لٹکائے دکھائی دیئے
جیسے اسد عمر کا لہجہ تھا اگر آج سے پانچ سات سال پہلے کی سیاست ہوتی تو محترمہ اور رائے صاحب نے بھی جوابی طور پر کھری کھری سنانی تھیں مگر اس وقت حالات تحریک انصاف کی گرفت میں ہیں اور مجبوراً یہ الفاظ برداشت کرنا پڑے یہ تو بھلا ہو ایم پی اے رانا شہباز احمد خان اور صاحبزادہ محبوب سلطان کا جو کا جو چھ سات سو بندے ساتھ لے گئے جھنگ میں رانا شہباز احمد خان کا ڈیرہ بھی بہت کام آیا جہاں ساتھ موجود لوگوں کو ریفریشمنٹ دی گئی اور یہ تازہ دم دستہ چرچی گراؤنڈ میں پہنچااور پھر انہیں دیکھ کر لوگوں نے چرچی گراؤنڈ میں آنا شروع کر دیا ویسے آج محترمہ غلام بی بی بھروانہ کو گزشتہ الیکشن کے اپنڑے بھرا شیخ یعقوب اور بھرجائی راشدہ یعقوب بہت یاد آئے ہونگے جو گزشتہ عام انتخابات میں ان کے جلسوں کو شارٹ نوٹس میں کھچا کھچ بھر دیا کرتے تھے آج بھی وہی بھرا اور بھرجائی (شیخ محمد یعقوب اور راشدہ یعقوب شیخ )ہوتے تو چرچی گراؤنڈ بہت چھوٹا پڑ جانا تھا جھنگ کے عین وسط میں چرچی گراؤنڈ کا انتخاب وہ کرتے ہیں جو بہت بڑا اجتماع نہ کر سکیں مگر چرچی گراؤنڈ میں بھی جھڑکیں پڑیں تو بڑا سوالیہ نشان بنتا ہے آج محترمہ کو بھی اندازہ ہو گیا ہوگا کہ بھرا اور بھرجائی ان کے لیئے کتنے اہم تھے
کیونکہ بھرا شیخ محمد یعقوب گرین ووڈ سٹی میں چند ماہ قبل بھی پندرہ ہزار بندے اکھٹے کر چکے ہیں علی امجد چوہدری

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں