37

*جھنگ(جاوید اعوان سے)تھیلیسیمیا ایک مہلک موذی مرض ھے مگر ضلع جھنگ کے صاحب اقتدار اور محکمہ صحت کے اعلی افسران چپ کی چادر اوڑھ کر سوئے ہوئے ہیں*

*جھنگ(جاوید اعوان سے)تھیلیسیمیا ایک مہلک موذی مرض ھے مگر ضلع جھنگ کے صاحب اقتدار اور محکمہ صحت کے اعلی افسران چپ کی چادر اوڑھ کر سوئے ہوئے ہیں* پچیس لاکھ کی آبادی والے ضلع میں تھیلیسیمیا کی تشخیص کے بنیادی ٹیسٹ کی سرکاری طور پر کوئی انتظام نہیں پرائیوٹ لیبارٹریز پر تین ھزار کی بھاری رقم میں ٹیسٹ کیا جارھا ھے خون سے لیکر انتقال خون کی سرکاری طور پر کوئی سہولت میسر نہیں مریضوں کے لواحقین اپنے طور پر خون کا بندوست کرنے پر مجبور خون کا بندوست کرنے بلڈ بیگ اور سکریننگ اور بلڈ ٹرانسفیوژن کی مد میں 1500.روپے خرچ ھوتے ھیں غریب عوام جو پہلے ھی مہنگائی کی وجہ سے خود کشیوں پر مجبور ھے اپنے معصوم پھولوں کے لئے خون کا بندوبست کیسے اور کہاں سے کرے خدارا جھنگ میں تھیلیسیمیا سنٹر کا قیام فوری طور پر عمل میں لایا جائے تاکہ غریب اور نادار مریضوں کی داد رسی ھو سکے منجانب اھل جھنگ.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں