40

افسر شاہی کی روایتی سستی، نااہلی اور ٹال مٹول و لیت و لعل کی پالیسی کے باعث جھنگ میں ماڈل ٹرک سٹینڈ و ڈلیوری گودامز کے قیام کا خواب شرمندہ تعبیر نہ ہوسکا، بزنس کمیونٹی کو سامان کی نقل و حمل کی سروسز فراہم کرنیوالے سٹیک ہولڈرز شدید مشکل و پریشانی کا شکار، ٹریفک وارڈنز کی جانب سے بلاجواز ٹرکوں کے چالانات بھی عذاب بن گئے، جھنگ ڈلیوری گودام گڈز ایسوسی ایشن کا حکام بالا سے صورتحال کا فوری نوٹس لینے کا مطالبہ

افسر شاہی کی روایتی سستی، نااہلی اور ٹال مٹول و لیت و لعل کی پالیسی کے باعث جھنگ میں ماڈل ٹرک سٹینڈ و ڈلیوری گودامز کے قیام کا خواب شرمندہ تعبیر نہ ہوسکا، بزنس کمیونٹی کو سامان کی نقل و حمل کی سروسز فراہم کرنیوالے سٹیک ہولڈرز شدید مشکل و پریشانی کا شکار، ٹریفک وارڈنز کی جانب سے بلاجواز ٹرکوں کے چالانات بھی عذاب بن گئے، جھنگ ڈلیوری گودام گڈز ایسوسی ایشن کا حکام بالا سے صورتحال کا فوری نوٹس لینے کا مطالبہ
جھنگ  (بیورو رپورٹ):افسر شاہی کی روایتی سستی، نااہلی،سرکاری فرائض کی سرانجام دہی میں غفلت اور ٹال مٹول و لیت و لعل کی پالیسی کے باعث جھنگ میں ماڈل ٹرک سٹینڈ و ڈلیوری گودامز کے قیام کا خواب شرمندہ تعبیر نہ ہوسکاہے جس پر بزنس کمیونٹی کو سامان کی نقل و حمل کی سروسز فراہم کر نیوالے سٹیک ہولڈرز شدید مشکل و پریشانی کا شکارہیں جبکہ ٹریفک وارڈنز کی جانب سے بلاجواز ٹرکوں کے چالانات بھی عذاب بن گئے ہیں جس پر جھنگ ڈلیوری گودام گڈز ایسوسی ایشن نے حکام بالا سے صورتحال کا فوری نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔جھنگ ڈلیوری گودام گڈزایسوسی ایشن جھنگ کے صدر ملک محمد رمضان نے وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار، چیف سیکرٹری پنجاب، سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو، کمشنر فیصل آباد اور ڈپٹی کمشنر جھنگ کے نام ارسال کی گئی تحریری درخواست میں مؤقف اختیار کیا کہ حکومت پنجاب کی خصوصی ہدایات پر صوبہ بھر میں ماڈل ٹرک سٹینڈ اور ڈلیوری گودام قائم کئے جارہے ہیں جس کیلئے ان کی طرف سے بھی طویل عرصہ سے کوششوں کا سلسلہ جاری ہے مگر افسر شاہی کے روایتی تاخیری حربے اس سلسلہ میں سب سے بڑی رکاوٹ بنے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جھنگ ایک بڑا کاروباری شہر ہے جہاں روزانہ درجنوں ٹرک تاجروں اور بزنس کمیونٹی کا سامان لیکر آتے ہیں جن کی ان لوڈنگ وغیرہ کیلئے جھنگ میں کوئی باضابطہ ٹرک سٹینڈ قائم نہیں جس کے نتیجہ میں شہر کی مختلف شاہرات پر مختلف گڈز ٹرانسپورٹرز و ڈلیوری گودام مالکان نے اپنے سروس سنٹر قائم کر رکھے ہیں لیکن جونہی کوئی ٹرک لاہور، کراچی، فیصل آبا، گوجرانوالہ اور ملک کے دوسرے شہروں سے بک کروایا گیا جھنگ کی بزنس کمیونٹی کا سامان لیکر جھنگ کی حدود میں داخل ہوتے ہیں تو ٹریفک وارڈنز فوری طور پر ان کا چالان کردیتے ہیں حتیٰ کہ کئی مرتبہ روڈ سے ہٹ کر سائیڈ پلیسز پر بند کھڑے سامان ان لوڈ کرتے ٹرکوں کا بھی زبردستی چالان کردیا جا تا ہے اور اس طرح ٹریفک وارڈنز کی طرف سے اختیارات کا ناجائز استعمال کیا جاتا ہے لیکن جب کوئی ڈلیوری گودام مالک یا ٹرک سٹینڈ پروپرائیٹر اس ظلم اور بلاجواز اقدام پر پرامن اور مہذب احتجاج کرتا ہے تو اس سے سخت بدتمیزی کی جاتی ہے اور یہ صورتحال ڈی ایس پی ٹریفک پولیس جھنگ سمیت تمام متعلقہ حکام کے بخوبی علم میں ہے مگر کسی کے کان پر جوں تک نہیں رینگی اس پر ستم ظریفی یہ کہ سیکرٹری ڈسٹرکٹ ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی جھنگ بھی سونے پر سہاگہ کا کام دیتے ہوئے کسی سے پیچھے نہ رہی ہیں اور ان کی جانب سے بھی ٹرکوں کے ناجائز و بلاجواز چالانات کا سلسلہ جاری و ساری ہے حالانکہ تمام اعلیٰ حکام اور ڈپٹی کمشنر جھنگ کی جانب سے جھنگ میں ماڈل ٹرک سٹینڈ اور ڈلیوری گودامز کے قیام کیلئے کیس سیکرٹری ڈی آر ٹی اے جھنگ کے حوالے کیا گیا ہے اور انہیں تمام صورتحال کا بخوبی علم ہے مگر وہ ماڈل ٹرک سٹینڈ اور ڈلیوری گودامز کے قیام کی کوششوں میں تیزی لانے کی بجائے صرف اس چکر میں کہ اگر ہم چالان کرکے حکومت کو ریونیو نہیں دیں گے تو حکومت ہمیں تنخواہ کہاں سے دے گی کے نام پر اختیارات کے ناجائز و اندھا دھند استعمال میں مصروف ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ان تمام مسائل کا واحد حل یہ ہے کہ ڈپٹی کمشنر جھنگ صورتحال کے فوری تدارک کیلئے سیکرٹری ڈی آر ٹی اے کو معاملہ سپیڈ اپ کرنے کا حکم جاری فرمائیں تاکہ بزنس کمیونٹی کا سامان لیکر آنے واے ٹرک براہ راست ماڈل ٹرک سٹینڈ پر آئیں اور ڈلیوری گودام مالکان ان کی ان لوڈنگ کرکے اپنی سروسز کی فراہمی کا سلسلہ جاری رکھ سکیں۔   

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں