38

جھنگ (محمد جاوید اعوان)ضلع جھنگ میں آئے روز غیر معیاری بوائلر پھٹنے کے واقعات میں اضافہ ہوگیا ہے ہر دفعہ دو سے تین افراد کی جان چلی جاتی ہے ہر فلور مل، شوگر مل اور آئل ملز و غیرہ غیرمعیاری برسوں پرانے بوائلر لگے ہوئے ہیں ذمہ دار محکمہ سالانہ کی بنیاد پر سب اچھا کی رپورٹ دے کر مال کماتے ہیں عوامی حلقے

جھنگ (محمد جاوید اعوان)ضلع جھنگ میں آئے روز غیر معیاری بوائلر پھٹنے کے واقعات میں اضافہ ہوگیا ہے ہر دفعہ دو سے تین افراد کی جان چلی جاتی ہے ہر فلور مل، شوگر مل اور آئل ملز و غیرہ غیرمعیاری برسوں پرانے بوائلر لگے ہوئے ہیں ذمہ دار محکمہ سالانہ کی بنیاد پر سب اچھا کی رپورٹ دے کر مال کماتے ہیں عوامی حلقے ذرائع کے مطابق مقامی رائس ملز میں بوائلر پھٹنے سے دو افراد ہلاک اور کئی زخمی ہوگئے ہیں اس سے پہلے بھی کئی فلور مل، کپڑے والی مل، شوگر مل، آئل مل اور پاور پلانٹ میں بوائلرپھٹنے کے واقعات ہو چکے ہیں ماہرین کے مطابق ہربوائلر کو سال میں دو بار چیک کرنا ضروری ہوتا ہے اور فٹنس لیٹر جاری کرنا ہوتا ہے لیکن یہ لیٹر جاری تو ہوتا ہے لیکن بنا چیک کیے جاری کیا جاتا ہے ذمہ دار محکمے اپنا حصہ وصول کرکے سب اچھا کی رپورٹ دیتے ہیں ہر فیکٹری میں کئی سال پرانے بوائلر اور دیگر مشینری موجود ہے ان کو بدلنا، چیک کرنے کرنے یا مرمت کرنے کا معیار حکومت کی طرف سے تو موجود ہے لیکن صرف کاغذات کی حد تک۔عوامی حلقوں نے ڈی سی جھنگ سے مطالبہ کیا ہے کہ مرنے والے اور زخمیوں کو مل مالکان کی طرف سے بھاری امداد لے کر دی جائے اور ذمہ داران کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے تاکہ آئندہ ایسا نہ ہو سکے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں